عمران خان کا ساتھ دینے کی بہت بڑی قیمت چکارہا ہوں، شیخ رشید

راولپنڈی (نیوزڈیسک) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ عمران خان کاساتھ دینے کی بہت بڑی قیمت چکارہاہوں ، پوری دنیاان کیساتھ ہوجائے مگر حکومت کوجانا ہی جانا ہے۔ایم کیو ایم کا پی ٹی آئی کو چھوڑنے کا فیصلہ ان کی تاریخ لکھے گی، ، احتجاج سے متعلق عدالت کا جوبھی فیصلہ ہوگا قبول کریں گے،لانگ مارچ میں خطرناک آنسوگیس استعمال کی گئی،5افرادجاں بحق ہوئے ،کیایہ خونی مارچ نہیں تھا؟، حکومت اوراسٹیبلشمنٹ ایک پیج پرنہیں ہے،سامراجی طاقتوں ،مینجمنٹ کرنیوالوں نے غلط فیصلے کئے، چور باپ اور چور بیٹے کا انتخاب کیا گیا کیا انہیں کوئی تیسرا شخص نہیں ملا؟ ۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ وعوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے لانگ مارچ کرناپڑاتولانگ مارچ کریں گے، بات چیت کرنی ہوئی تووہ بھی کریں گے، جون کی 5 سے 25 تاریخ بہت اہم ہے۔شیخ رشید نے کہا کہ پوری دنیا ان کے ساتھ ہوجائے لیکن حکومت کوجانا ہی جانا ہے ، رواں سال الیکشن ہوتے ہوئے دیکھ رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کے پاس ریموٹ ہے، مرضی کے چینل دیکھتے ہیں، لوگ آج ان کاچہرہ ٹی وی پردیکھتے ہیں توچینل بدل دیتے ہیں ، لوگوں کے پاس اختیار ہے وہ کیا دیکھنا چاہتے ہیں اورکیاسنناچاہتے ہیں، اختیاراب عوام کے پاس ہے چند لوگوں کے پاس نہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کا پی ٹی آئی کو چھوڑنے کا فیصلہ ان کی تاریخ لکھے گی، فیصلہ ان کے حق میں گیا یا خلاف گیا مستقبل فیصلہ کرے گا۔شیخ رشید نے بتایا کہ مشکل اورامتحان کے وقت نسلی لوگ ساتھ نبھاتے ہیں، عمران خان کاساتھ دینے کی بہت بڑی قیمت چکارہا ہوں۔لانگ مارچ کے دوران پولیس کے تشدد کے حوالے سے سابق وزیر نے کہا کہ ایوب خان کے دورمیں بھی ایسے مظالم نہیں دیکھے، راناثنااللہ کوبتاناچاہتاہوں تمہارے اعلانات کے باوجودمیں پہنچاتھا، یہ قوم سب کی ہے سب کواس قوم کو اپناسمجھناچاہیے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کو چلتے ہوئے نہیں دیکھ رہا ۔موجودہ حکمران ساری زندگی استعمال ہوتے رہے ہیں، یہ لوگ زیادہ دیرنہیں چلیں گے بس جون کامہینہ ہے، جواپنے بھائی کو ملک واپس نہیں لاسکے وہ ملک سنبھالیں گے۔

شیخ رشید نے کہا کہ عمران خان کہتے ہیں الیکشن کی تاریخ دیدیں پھربات ہوگی، موجودہ حکمران سمجھتے ہیں عمران خان کوتاریخ دیدی توہماری تاریخ فکس ہوجائیگی ، احتجاج سے متعلق جوبھی عدالت کا فیصلہ ہوگا قبول کریں گے ، سپریم کورٹ پاکستان کے مستقبل کیلئے اہم فیصلے کرے گی۔انہوں نے بتایا کہ لانگ مارچ میں5افرادجاں بحق ہوئے کیایہ معمولی بات ہے، خطرناک آنسوگیس استعمال کی گئی،کیایہ خونی مارچ نہیں تھا، کیاحکومت کی طرف سے مظاہرین پرطاقت کا استعمال نہیں کیا گیا۔انہوں نے وفاقی وزیر داخلہ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ راناثنااللہ بدمعاش ہے خودپرفردجرم عائدنہیں ہوئے دیگا، ایسی جمہوریت پرلعنت کہ جس پرفردجرم لگ رہی ہو اور وہ وزیراعظم بن جائے، ہرجگہ سے ردعمل آرہا ہے، جوبھی مظالم کررہے ہیں سب جوابدہ ہوں گے۔

پوری قوم اس وقت ردعمل دے رہی ہیں، شفاف الیکشن ہوں گے تو پتہ چل جائے گا کہ کیسا ردعمل آتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت اوراسٹیبلشمنٹ ایک پیج پرنہیں ہے، نوازشریف جب تک واپس نہیں آئے گا اسٹیبلشمنٹ سے اچھے تعلقات نہیں ہوسکتے، گالیاں دینے والوں کیساتھ اسٹیبلشمنٹ کے تعلقات اچھے نہیں ہوسکتے۔انہوں نے کہا کہ ملک میں ایساکون ساگھرہے جہاں اسلحہ نہیں ہے ، پاکستان کاکوئی گھرایسانہیں جس میں اسلحہ نہیں ہے، سامراجی طاقتوں نے جو فیصلے کیے مینجمنٹ کرنے والوں نے بھی غلط فیصلے کیے، چور باپ اور چور بیٹے کا انتخاب کیا گیا کیا انہیں کوئی تیسرا شخص نہیں ملا، لوگوں کی آنکھوں میں نفرت بڑھ رہی ہے حالات مزید بگڑیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں